Ticker

6/recent/ticker-posts

Sad Poetry SMS in Urdu

Poetry in Urdu 2 Lines

John Elia Poetry in Urdu


بساط زندگی تو ہر گھڑی بچھتی ہے


بساط زندگی تو ہر گھڑی بچھتی ہے

 اٹھتی ہے یہاں پر جتنے خانے جتنے گھر ہیں

 سارے

 خوشیاں اور غم انعام کرتے ہیں

 یہاں پر سارے مہرے

 اپنی اپنی چال چلتے ہیں

 کبھی محصور ہوتے ہیں کبھی آگے نکلتے ہیں

 یہاں پر شہہ بھی پڑتی ہے

 یہاں پر مات ہوتی ہے

 کبھی اک چال ٹلتی ہے

 کبھی بازی پلٹتی ہے

 یہاں پر سارے مہرے اپنی اپنی چال چلتے ہیں

 مگر میں وہ پیادہ ہوں

 جو ہر گھر میں

 کبھی اس شہہ سے پہلے اور کبھی اس مات سے پہلے

 کبھی اک برد سے پہلے کبھی آفات سے پہلے

 ہمیشہ قتل ہو جاتا ہے


bisaat zindagi to har ghari bichhti hai uthti hai


bisaat zindagi to har ghari bichhti hai uthti hai

yahan par jitne khanaay jitne ghar hain

saaray

khusihyan aur gham inaam karte hain

yahan par saaray muhray

apni apni chaal chaltay hain

kabhi mahsor hotay hain kabhi agay nikaltay hain

yahan par sheh bhi padtee hai

yahan par maat hoti hai

kabhi ik chaal 
talti hai

kabhi baazi palatti hai

yahan par saaray muhray apni apni chaal chaltay hain

magar mein woh peyadah hon

jo har ghar mein

kabhi is sheh se pehlay aur kabhi is maat se pehlay

kabhi ik bard se pehlay kabhi afaat se pehlay

hamesha qatal ho jata hai



For More John Elia Poetry :

Love Poetry in Urdu