Ticker

6/recent/ticker-posts

2 Lines Urdu Poetry Copy Paste

Poetry in Urdu 2 Lines

Allama Iqba Poetry in Urdu


ایک نوجوان کے نام


ترے صوفے ہیں افرنگی ترے قالیں ہیں ایرانی

 لہو مجھ کو رلاتی ہے جوانوں کی تن آسانی


 امارت کیا شکوہ خسروی بھی ہو تو کیا حاصل

 نہ زور حیدری تجھ میں نہ استغنائے سلمانی 


 نہ ڈھونڈ اس چیز کو تہذیب حاضر کی تجلی میں

 کہ پایا میں نے استغنا میں معراج مسلمانی


 عقابی روح جب بیدار ہوتی ہے جوانوں میں

 نظر آتی ہے ان کو اپنی منزل آسمانوں میں


 نہ ہو نومید نومیدی زوال علم و عرفاں ہے

 امید مرد مومن ہے خدا کے راز دانوں میں


 نہیں تیرا نشیمن قصر سلطانی کے گنبد پر

 تو شاہیں ہے بسیرا کر پہاڑوں کی چٹانوں میں


Aik nojawan ke naam

tre sofay hain افرنگی tre قالیں hain irani

lahoo mujh ko rulati hai jawanoo ki tan aasani


amarat kya shikwah Khusravi bhi ho to kya haasil

nah zor haidry tujh mein nah استغنائے سلمانی


nah dhoond is cheez ko tahazeeb haazir ki tajallii mein

ke paaya mein ne استغنا mein mairaaj musalmani


aqaabi rooh jab bedaar hoti hai jawanoo mein

nazar aati hai un ko apni manzil asmano mein


nah ho نومید نومیدی zawaal ilm o arfaan hai

umeed mard momin hai kkhuda ke raaz daano mein


nahi tera nashiman qasr sultaani ke gunbad par

to shahin hai basera kar pahoron ki chatanoo mein


For More Allama Iqbal Poetry :